میاں بیوی کو 66 سال قیداورجرمانہ

0
91

ہاٹ لائن نیوز : ابوظہبی کی ایک عدالت نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ اماراتی جوڑے کو جعلسازی، رشوت ستانی اور تجارتی فراڈ کے الزام میں 66 سال قید کی سزا سنائی گئی۔ اس فیصلے میں جوڑے کے لیے 10 ملین ڈالر کا جرمانہ بھی شامل ہے۔

اماراتی جوڑے کے شراکت داروں کو بھی اسی جرائم میں ملوث ہونے، مدد کرنے اور اس کی حوصلہ افزائی کرنے پر قید اور جرمانے کی سزا سنائی گئی۔

تحقیقات سے معلوم ہوا کہ اماراتی جوڑے نے اپنے گھر میں پرائیویٹ گودام بنا کر اشیائے خوردونوش کی فروخت کا کاروبار شروع کیا اور بعد میں انہیں مہنگے داموں فروخت کیا۔

اشیائے خوردونوش اور اشیائے خوردونوش کے حوالے سے ایکسپائری ڈیٹ کے بعد جعلی نئی ’’ایکسپائری ڈیٹ‘‘ کے مہریں لگا کر انسانی صحت اور زندگیوں سے کھلواڑ کر رہے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ اس سلسلے میں کئی اور لوگ بھی ان کے ساتھ جڑے ہوئے تھے۔

متحدہ عرب امارات میں دولت کے خواہشمند جوڑے پر رشوت دے کر بجلی کے کنکشن حاصل کرنے کا بھی الزام ہے۔

ابوظہبی کی وزارت انصاف کے مطابق طاقتور جوڑے نے عوامی اتھارٹی میں مداخلت کے لیے اپنا اثرورسوخ استعمال کیا اور اپنے نجی فارم میں بغیر میٹر کے پانی کے پائپ بچھا کر پانی چوری کیا۔

اسی طرح، مدعا علیہان پر الیکٹریکل پینل کو اوور لوڈ کرکے چھ املاک پر برقی پینل کے آلات کو نقصان پہنچانے کا الزام تھا۔ علاوہ ازیں حکام کا کہنا تھا کہ ملزمان نے غیر قانونی طور پر سرکاری املاک پر قبضہ کیا ۔

Leave a reply