توہین عدالت کیس!!! رانا شمیم کا سر بمہر بیان حلفی لاہور ہائیکورٹ میں جمع!بیان حلفی پہلے جیسا شائع ہوا ویسا ہے یا مختلف؟؟

اسلام آباد(ہاٹ لائن نیوز ) سلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے توہین عدالت کیس کی سماعت کی ۔ ایڈوو کیٹ جنرل ، صحافی انصار عباسی ، عامر غوری اور سابق چیف جج گلگت بلتستان رانا شمیم اپنے وکیل لطیف آفریدی سمیت عدالت پیش ہوئے ۔ عدالت میں لندن سے آیا کورئیر کا ڈبہ پیش کیا گیا ، چیف جسٹس نے کہا کہ یہ ابھی تک سربمہر ہے ، بیان حلفی کو کھولا نہیں گیا ، اٹارنی جنرل اس وقت عدالت میں موجود نہیں ہیں ۔ سماعت میں ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کراچی کے آغا خان ہسپتال میں داخل ہیں اور جمعرات کو واپس آئیں گے۔

چیف جسٹس نے کورئیر کا ڈبہ رانا شمیم کے وکیل کو دینے کا کہا مگر لطیف آفریدی نے سربمہر بیان حلفی لینے سے معذرت کر لی ۔ لطیف آفریدی نے کہا کہ عدالتی حکم پر بیان حلفی منگوایا گیا ہے ،چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ جو باکس اسلام آباد ہائیکورٹ کو موصول ہوا ہے اسے مزید سیل کرتے ہیں ، اسے اٹارنی جنرل کی موجودگی میں کھولنا ہے ابھی ؟.

لطیف آفریدی نے کہا کہ میں نے دیکھ لیا ہے ، باکس سو فیصد سیل ہے ۔عدالت نے کہا کہ یہ باکس آئندہ سماعت پر اٹارنی جنرل کی موجودگی میں کھولا جائے گا۔ چیف جسٹس ہائی کورٹ نے کہا کہ یہ ایک اوپن انکوائری ہے، یہ ہمارا احتساب ہے، بادی النظر میں رانا شمیم نے بغیر شواہد بہت بڑا بیان دے دیا.

انہوں نے تاثر دیا کہ ہائی کورٹ کے تمام ججز کمپرومائزڈ ہیں۔ جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ اس کورٹ نے گزشتہ سماعت پر بھی کہا تھا کہ ہائی کورٹ رپورٹرز انتہائی پروفیشنل ہیں، ایک واقعہ تھا جو عدالت کے نوٹس میں لایا گیا تھا اس حوالے سے درخواست بھی آ گئی ہے، صرف ایک چینل نے غلط رپورٹ کیا۔ بعدازاں کیس کی سماعت اٹھائیس دسمبر تک کے لیے ملتوی کردی گئی۔


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (0) in /home/hotlinenews/public_html/wp-includes/functions.php on line 5107