جسٹس (ر) وجیہہ الدین اس وقت عمران خان پر الزام کیوں لگا رہے ہیں؟ حقیقت سامنے آگئی

اسلام آباد(ہاٹ لائن نیوز) گزشتہ روز جسٹس (ر) وجیہہ الدین نے ایک ٹی وی پروگرام میں انکشا ف کیا تھا کہ عمران خان کا گھر چلانے کے لیے جہانگیر ترین جیسے لوگ تیس تیس لاکھ دیا کرتے تھے جو بعد میں پچاس لاکھ تک کیے گئے۔

ان کا کہنا تھاکہ یہ سوچ بالکل غلط ہے کہ عمران خان کوئی دیانت دار آدمی ہیں جس آدمی کے جوتے کے تسمے بھی اس کے اپنے پیسوں کے نہ ہوں اسے دیانت دار کیسے کہا جا سکتا ہے؟ان کے بیان کے بعد پی ٹی آئی کے دیگر رہنماؤں نے جسٹس (ر) وجیہہ الدین کو مسخرہ کو آڑے ہاتھوں لینا شروع کر دیا ہے۔

وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے جسٹس (ر) وجیہہ الدین کو مسخرہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کو ان کے گھر والے بھی نہیں پہنچانتے، ایسے لوگ اپنی اہمیت بنانے کیلئے مسخروں والی باتیں کرتے ہیں۔

ا س حوالے سے وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط شہباز گل کا کہنا تھاکہ جسٹس (ر) وجیہہ الدین کا بیان بالکل جھوٹا اور غیر منطقی ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ وجیہہ الدین پارٹی سے ہٹائے جانے کے دکھ میں اکثر ایسے غیر منطقی بیان دیتے رہتے ہیں۔


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (0) in /home/hotlinenews/public_html/wp-includes/functions.php on line 5107