20

منی لانڈرنگ کیس!ایف آئی اے نے ثبوت عدالت میں جمع کرا دیئے ،کیا کیا الزامات عائد کیے گئے؟

لاہور(ہاٹ لائن نیوز )ایف آئی اے نے مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف اور ان کے صاحبزادوں حمزہ شہباز اور سلیمان شہباز کیخلاف چلان عدالت میں جمع کرا دیا ہے۔

چالان میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو مرکزی ملزم نامزد جبکہ چودہ بےنامی کھاتے دار چپڑاسیوں،کلرکوں اور چھ سہولت کاروں کو شریک ملزم ٹھہرایا گیا۔

ایف آئی اے نے چالان میں گواہوں کی فہرست بھی دی ہے اور کہاہے کہ سلیمان شہباز سمیت تین ملزمان اس مقدمے میں اشتہاری ہو چکے ہیں۔چالان میں کہاگیاکہ شریف فیملی کے چپڑاسیوں اور کلرکوں کے ناموں پر مختلف بینکوں میں اکاؤنٹس چلائے گئے.

اٹھارہ بینک اکاؤنٹس میںسترہ ہزار سے زائد ٹرانزکشنز کی منی ٹریل کا تجزیہ کیا گیا، تفتیش میں ٹھوس شواہد سامنے آئے کہ اکاؤنٹس میں بھاری رقم چھپائی گئی، شہبازشریف کو نذرانہ کے طور پر دی گئی رقم ان ہی اکاؤنٹس میں شامل ہے۔

چالان میں مزید کہاگیاکہ شہباز شریف پچاس لاکھ امریکی ڈالرز سے زائد کی منی لانڈرنگ میں براہِ راست ملوث تھے، شہبازشریف نے بیرون ملک ترسیلات بحرین کی ایک خاتون کے نام اسحاق ڈار کی مدد سے کیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں