نہری پانی کا ضیاع!پاکستان کو سالانہ کتنے ارب ڈالر کا نقصان ہو رہا ہے؟ خوفناک انکشاف

اسلام آباد(ہاٹ لائن نیوز) آزادی کے بعد سے اب تک پاکستان کی آبادی میں 5 گنا اضافہ ہوا ہے جب کہ تازہ پانی کی دستیابی 5 ہی گنا کم ہوگئی ہے۔

نجی نیوز چینل ایکسپریس کی پاکستان میں زرعی شعبہ 90فیصد تازہ پانی استعمال کرتا ہے۔ کسانوں کو یہ پانی بلامعاوضہ دستیاب ہوتاہے مگر درحقیقت اس کی قیمت کاشتکاری کے دوران نصف پانی کے ضیاع کی صورت میں ادا کرنی پڑتی ہے۔

دریائے سندھ کا نصف سے زائد پانی زرعی زمین تک نہیں پہنچ پاتا۔ مختلف تخمینوں کے مطابق ٹیل تک پانی پہنچنے کے دوران 30 سے 50 فیصد تک پانی ضایع ہوچکا ہوتا ہے۔ اس کا معیشت پر بہت منفی اثر پڑ رہا ہے۔

موجودہ تخمینوں کے مطابق 50 فیصد زرعی پانی کے ضایع کرنے کا مطلب ہے کہ ہم ہر سال 4 سے 10 ارب ڈالرضایع کررہے ہیں۔ یہ اربوں ڈالر بچانے کے لیے آن فارم واٹر مینجمنٹ پر چند کروڑ خرچ کرنے ہوں گے۔ اس کے ساتھ ساتھ واٹر اسمارٹ ایگریکلچرکو فروغ دینے اور اس میں سرمایہ کاری کرنے کی بھی سخت ضرورت ہے۔


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (0) in /home/hotlinenews/public_html/wp-includes/functions.php on line 5107