منی بجٹ پر بحث کرنے کی اجازت نہ ملنے پر شیری رحمان ناراض ہوگئیں!کیا قدم اُٹھا لیا؟

اسلام‌آباد(ہاٹ لائن نیوز) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس میں مِنی بجٹ پر بحث نہ کرنے پر پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی سینیٹر شیری رحمان نے احتجاجاً واک آؤٹ کردیا۔

ضمنی بجٹ کے معاملے پر سینیٹر شیری رحمان اور سینیٹر فیصل رحمان میں تلخ کلامی ہوئی، سینیٹر شیری رحمن کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف معاہدے کی تفصیلات شیئر کی جائیں، ایسی کون سی پیشگی شرائط ہیں جو طے نہیں ہورہیں۔

اجلاس میں کمیٹی نے مشیر خزانہ کو پیش ہو کر سعودی عرب سے 3 ارب ڈالر قرض کی شرائط بتانے کا کہا جبکہ مشیر خزانہ شوکت ترین کی عدم موجودگی پر ایجنڈا موخر کردیا۔

سینیٹر شیری رحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مشیر خزانہ شوکت ترین کی وجہ سے اجلاس دو بار مؤخر ہوا، مِنی بجٹ سے مہنگائی کا آتش فشاں آئے گا، پارلیمان کو بتایا جائے آئی ایم ایف کی کیا شرائط ہیں، ہمیں حکومت سے جواب چاہیے۔


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (0) in /home/hotlinenews/public_html/wp-includes/functions.php on line 5107