شہر اقتدار میں اور کراچی میں الگ الگ قانون کیوں؟ وزیر اعلیٰ سندھ پھٹ پڑے،عدلیہ سے بڑا سوال کردیا

اسلام آباد(ہاٹ لائن نیوز) وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ نسلہ ٹاور کے معاملے پر درمیانی راستہ نکالا جاسکتا تھا، اسلام آباد میں عمارتیں ریگولرائز ہوسکتی ہیں تو نسلہ ٹاور کیوں نہیں ؟ جن لوگوں نے عمارت کی منظوری دی ان کو سزا ہونی چاہے۔

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے حکم پرنسلہ ٹاور کو گرانے کے پابند ہیں مگر جنہوں نے تعمیرات کی غلط منظوری دی ان کو سزا ہونی چاہیے۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ سندھ رجسٹری کے ھکم پر نسلہ ٹاؤر کو گرانے کا کام جاری ہے۔اور عمارت کو مکینوں سے بھی مکمل خالی کرا لیا گیا تھا


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (0) in /home/hotlinenews/public_html/wp-includes/functions.php on line 5107