رواں مالی سال وفاقی ترقیاتی پروگرام کے تحت کئی بڑے منصوبوں کے لیے فنڈز جاری نہ ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ 38

وفاقی ترقیاتی پروگرام کے تحت کئی بڑے منصوبوں کیلئے فنڈز جاری نہ ہونے کا انکشاف

رواں مالی سال وفاقی ترقیاتی پروگرام کے تحت کئی بڑے منصوبوں کے لیے فنڈز جاری نہ ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ جبکہ ذرائع کے مطابق رواں مالی سال وفاقی ترقیاتی پروگرام کے تحت کئی منصوبوں پر فنڈز جاری ہونے کے باوجود خرچ نہ ہوسکے۔اس لیے ذرائع کا کہنا ہے کہ نئے گوادر انٹرنیشنل ائیرپورٹ، فیصل آباد خانیوال موٹروے اور کالا شاہ کاکو لاہور ہائی وے منصوبوں کے لیے فنڈز رکھے گئے تاہم فنڈز کی تخصیص کے باوجود بھی ان منصوبوں پر رواں مالی سال کوئی پیش رفت نہ ہوئی۔ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ راجن پور ڈی جی خان ہائی وے اور ڈی جی خان ڈی آئی خان 245 کلو میٹر سڑک پر بھی کام نہ ہوا۔اور عالمی بینک کے تعاون سے بننے والے خیبر پاس اکنامک کوریڈور پر بھی رواں مالی سال کوئی پیش رفت نہ ہوسکی۔
ذرائع کے مطابق گلگت بلتستان شندور روڈ منصوبے پر بھی کام کا آغاز نہ ہوسکا۔ خضدار کچلاک روڈ این 25 کو دورویہ کرنے کے منصوبے پر بھی فنڈز کی تخصیص کے باوجود کام نہیں ہوسکا۔وزارت خزانہ کے فنانشل انکلوژن و انفراسٹرکچر منصوبے پر بھی فنڈز کی تخصیص کے باوجود پیش رفت نہ ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں