نیند میں بہتری لانےوالاگیجٹ

0
76

ہاٹ لائن نیوز : سائنسدانوں نے ایک ایسا آلہ بنایا ہے جو دماغی لہروں کو سمفنی میں بدل کر نیند کے معیار کو بہتر بنا سکتا ہے۔

محققین کا دعویٰ ہے کہ سونے سے پہلے اس ٹول کے استعمال سے نیند کے معیار میں نمایاں بہتری آسکتی ہے۔

مائی ویوز نامی یہ ڈیوائس مشہور نیورو سائنٹسٹ ڈاکٹر ایلین ڈیسٹیکس نے اس وقت ایجاد کی تھی جب وہ غلطی سے ایک عجیب و غریب واقعہ کا شکار ہو گئے۔

مطالعات سے پتہ چلتا ہے کہ آپ کے دماغ کی سرگرمی کی آواز سننے سے آنکھوں کی تیز رفتار حرکت (REM) کے ادوار میں بہتری آسکتی ہے۔ REM نیند وہ مرحلہ ہے جس میں آنکھیں مختلف سمتوں میں حرکت کرتی ہیں۔ یہ نیند کے چکر کا ایک اہم حصہ ہے کیونکہ اس دوران ہماری یادداشت متحرک ہوتی ہے، ہمارا دماغ ترقی کرتا ہے اور ہم خواب دیکھتے ہیں۔

اس ٹول سے فائدہ اٹھانے کے لیے، صارفین کو سب سے پہلے اپنی پیشانی سے منسلک ڈیوائس کے ساتھ رات گزارنی ہوگی۔

اس عرصے کے دوران یہ آلہ گہری نیند کے دوران دماغ کو ریکارڈ کرتا ہے اور اس وقت موجود لہروں کی نقل کرنے کے لیے موسیقی کے تین ٹکڑے بناتا ہے۔

ڈاکٹر ڈیسٹکس کے مطابق، تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ دماغ ایک “ہزاروں آلات بجانے والے آرکسٹرا” کی طرح ہے، جو بلیڈ رنر طرز کی موسیقی تخلیق کرتا ہے۔

بہترین نتائج کے لیے، کمپنی صارفین کو مشورہ دیتی ہے کہ وہ ہر رات سونے سے پہلے کم از کم 30 منٹ تک ڈیوائس کے ذریعے تیار کردہ موسیقی سنیں۔

کمپنی نے اس گیجٹ کو 2024 کنزیومر الیکٹرانکس شو میں دکھایا، جو لاس ویگاس میں 10 سے 12 جنوری تک منعقد ہوا تھا۔

کمپنی اگلے ماہ اس ڈیوائس کو باضابطہ طور پر لانچ کرنے والی ہے اور اس پروڈکٹ کی قیمت تقریباً £400 ہوگی۔

Leave a reply