نادرا افسران کی گرفتاری کی بڑی وجہ سامنے آگئی

0
123

ہاٹ لائن نیوز : ایف آئی اے نے جعلی شناختی کارڈ بنانے میں ملوث 4 رکنی گینگ کو گرفتار کرلیا، ملزمان نادرا کے سابق افسران ہیں جنہوں نے 2019 اور 20 میں غیر ملکیوں کو شناختی کارڈ جاری کیے تھے۔

غیر قانونی شناختی کارڈز کے اجراء کے کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ہے اور ایف آئی اے اینٹی کرپشن سرکل اسلام آباد نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے جعلی شناختی کارڈ بنانے میں ملوث 4 رکنی گینگ کو گرفتار کر لیا ہے۔

ایف آئی اے ترجمان کے مطابق گرفتار ملزمان نادرا کے سابق افسران ہیں جنہیں اسلام آباد سے گرفتار کیا گیا ہے۔

ایف آئی اے کے ترجمان نے بتایا کہ گرفتار ملزمان میں عدنان عمار، محمد طاہر، محمد عامر خان اور محمد طیب شامل ہیں جو نادرا میگا سینٹر اسلام آباد میں ڈپٹی اسسٹنٹ ڈائریکٹر اور سینئر ایگزیکٹو کے عہدے پر تعینات تھے اور 2019 اور 2020 میں تعیناتی کے دوران . غیر ملکیوں کوشناختی کارڈجاری کئے۔

ترجمان کے مطابق ملزمان احساس پروگرام کے نام پر مزدوروں کے بائیو میٹرکس لیتے تھے اور بعد میں افغان شہریوں کو فیملی ٹری میں رجسٹرڈ کرتے تھے۔

ایف آئی اے ترجمان کے مطابق ملزمان نے سادہ لوح شہریوں کو رقم کا لالچ دے کر اپنے جال میں پھنسایا اور ان کے خاندانی درخت کو غیر قانونی طور پر استعمال کیا۔ ملزمان نے افغان شہریوں کو کئی کارکنوں کی فیملی ٹری میں رجسٹر کیا۔

ترجمان کے مطابق گرفتار ملزمان نے تعیناتی کے دوران متعدد شناختی کارڈ جاری کیے، ملزمان نے شناختی کارڈ کے اجراء کی آڑ میں بھاری رقوم وصول کیں۔

Leave a reply