لانگ مارچ کے لیے موجودہ وقت مناسب نہیں، وزیر اطلاعات سندھ 39

لانگ مارچ کے لیے موجودہ وقت مناسب نہیں، وزیر اطلاعات سندھ

وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا ہے کہ لانگ مارچ کے لیے موجودہ وقت مناسب نہیں۔

اپنے جاری کردہ بیان میں وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا کہ لانگ مارچ سے پھر کاروبار متاثر ہوگا ،پہلے ہی معیشت کمزور ہے۔

شرجیل میمن نے کہا کہ لانگ مارچ کی وجہ سے دکانیں بند اور معمولات زندگی متاثر ہوگی، عمران خان لانگ مارچ فیصلے پر نظر ثانی کریں۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن اصلاحات کے بعد انتخابات ضرور ہو ں گے ، الیکشن ہوں گے تب بھی عمران خان نتائج تسلیم نہیں کریں گے۔

شرجیل میمن نے کہا کہ 4 حلقوں کے نتائج پر عمران خان تنازعہ بناچکے ہیں، پی ٹی آئی نے آئی ایم ایف کے ساتھ معاملات طے کرلیے تھے۔

وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا کہ الزام تراشی کے حق میں نہیں سب کو بہتر فیصلے کرنے ہوں گے، سیاست میں بڑی شخصیت وہ جس میں انا نہیں ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ آصف زرداری نے سانحہ اے پی ایس کے دوران لوگوں کومتحد کیا، انہوں نے ماضی میں عمران خان کو فیس سیونگ میں مدد کی کوشش کی۔

شرجیل میمن نے کہا کہ عمران خان سے نظریاتی اختلاف ضرور ہے مگر کوئی کسی کا دشمن نہیں، ملک مزید انتشار کا متحمل نہیں ہوسکتا۔

وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ کراچی ساحلی شہر ہے ،ٹرانسپورٹ بند اور سامان خراب نہیں ہونے دیں گے کیونکہ پیپلزپارٹی لانگ مارچ سے سڑک بند ہوئی اور نہ ہی گملہ ٹوٹا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے پی ٹی آئی کو لانگ مارچ سے نہیں روکا۔

واضح رہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے 25 مئی کو اسلام آباد لانگ مارچ کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ اسمبلی تحلیل کریں اورالیکشن کااعلان کریں۔

پشاور میں کورکمیٹی کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پی ٹی آئی کور کمیٹی اجلاس میں لانگ مارچ کا فیصلہ کرلیا ہے ، حقیقی آزادی مارچ 25 مئی کو کیا جائے گا اور میں سری نگر ہائی وے پر دوپہر 3 بجے آپ سے ملوں گا، صرف پی ٹی آئی ورکرز کو نہیں بلکہ پوری قوم کودعوت دے رہا ہوں، سب خواتین کوبھی لانگ مارچ میں شرکت کی دعوت دے رہا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ ہمارامطالبہ ہے کہ اسمبلی تحلیل کریں اورالیکشن کا اعلان کریں اور اداروں نے کہا ہے کہ ہم نیوٹرل ہیں تو پھرنیوٹرل رہیں، ابھی بتارہا ہوں ، 2 دن پہلے انٹرنیٹ بند کردیا جائے گا جب کہ ہمارے پرامن مارچ میں رکاوٹ ڈالی گئی تو قانونی کارروائی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں