عالمی معیشت تباہی کے دہانے پر

0
54

ہاٹ لائن نیوز: نگراں وزیراعظم کی مشیر برائے انسانی حقوق مشال ملک نے کہا ہے کہ بھارت اور اسرائیل کی دہشت گردی پوری دنیا میں پھیل رہی ہے۔

راولپنڈی چیمبر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مشعال ملک نے کہا کہ گزشتہ 12 دنوں سے فلسطین پر ایک آفت برپا ہے۔ ہر کوئی خون کے آنسو رو رہا ہے۔ اسرائیلی فوج روزانہ کی بنیاد پر فلسطینی بچوں کو قتل کر رہی ہے۔ ہر 15 منٹ میں ایک فلسطینی بچہ شہید ہوتا ہے۔ 12 دنوں سے فلسطینی خوراک، ادویات اور پانی کی فراہمی سے محروم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل کی جانب سے سفید فاسفورس کا استعمال کرکے فلسطینی عوام کی املاک کو تباہ کیا جارہا ہے۔ دنیا نے اسرائیل پر اقتصادی اور دفاعی پابندیاں عائد کر دیں۔ اسرائیل اور بھارت جو کچھ کرتے ہیں وہ دنیا میں کبھی نہیں دیکھا گیا۔ فلسطین اور کشمیر کھلی جیلیں ہیں، سب سے زیادہ نسل کشی فلسطین میں ہو رہی ہے۔ اسرائیلی فوج ہر جنگ میں فلسطینی بچوں کی ہلاکتوں میں اضافہ کر رہی ہے۔
مشال ملک نے کہا کہ فلسطین میں 5 سے 6 ہزار افراد شہید ہو چکے ہیں۔ اسرائیلی جارحیت کا دنیا پر بڑا اثر پڑنے والا ہے۔ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بھی متاثر ہوں گی۔ اسرائیل نے ایک نئی مثال قائم کی کہ وہ جو چاہے، دنیا اسے کہہ یا روک نہیں سکتی۔ دنیا سے کوئی مضبوط اور طاقتور آواز نہیں آرہی جو اسرائیل کو روک سکے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا دنیا میں کوئی ایسا نہیں جو اسرائیل کو جنگی جرائم کے ارتکاب سے روک سکے۔

نگران وزیراعظم کے مشیر برائے انسانی حقوق نے غزہ کے اطراف کی سرحدیں کھولنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی مبصرین کو وہاں جانے کی اجازت دی جائے۔ پاکستانی عوام فلسطینیوں اور کشمیریوں کے ساتھ ہیں۔ فلسطین میں فوری جنگ بندی ہونی چاہیے۔ نیتن یاہو، مودی کا گٹھ جوڑ بے نقاب ہو رہا ہے۔ فلسطینیوں سے کہا جا رہا ہے کہ وہ یہاں سے چلے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی عوام اپنی جگہ کیوں چھوڑیں؟

مشعال ملک نے کہا کہ جو افغانستان میں ایک سال میں کیا گیا اتنا نقصان فلسطین میں کارپٹ بمباری سے 2 دن میں ہوا۔ ہندوتوا کے ذریعے دہشت گردی پھیلائی جا رہی ہے۔ جنیوا کنونشنز کی کھلم کھلا خلاف ورزیاں جاری ہیں۔ اس معاملے میں صرف مذمت ہی کافی نہیں، امن پسند قوتیں کہاں ہیں؟ دنیا میں مذہبی ہم آہنگی کے قائدین کو آگے بڑھ کر کردار ادا کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ فلسطین کی جنگ روکنے کے لیے پوری دنیا سے آواز اٹھنی چاہیے۔ فلسطین کی جنگ نہ رکی تو عالمی معیشت تباہ ہونے کے خدشات ہیں۔ پاکستان ہمیشہ فلسطینی عوام کے ساتھ ہے۔ یہ معاملہ رکنے والا نہیں ہے۔ اسرائیل کی دہشت گردی پوری دنیا میں پھیل رہی ہے۔

Leave a reply