12

طوفانی بارشوں نے تباہی مچا دی ، درجنوں ہلاکتیں، لاکھوں افراد پھنس گئے ، افسوسناک صورتحال

سلہٹ(ہاٹ لائن نیوز) بنگلا دیش میں تباہ کن طوفانی بارشوں اور سیلاب سے ہلاکتوں کی تعداد 41 ہو گئی ہے، جب کہ 40 لاکھ سے زیادہ افراد مختلف علاقوں میں پھنس چکے ہیں۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتے کے دوران ہونے والی مسلسل بارشوں سے بنگلا دیش کے شمال مشرق کے وسیع علاقے زیر آب آ گئے ہیں، ہنگامی حالات
سے نمٹنے کے لیے انتظامیہ نے فوج کو طلب کر لیا۔ایک ہفتے سے جاری طوفانی بارشوں سے ہر طرف تباہی مچ گئی ہے، مختلف حادثات میں اکتالیس افراد جان سے گئے، جب کہ متعدد لا پتا ہیں، غیر ملکی میڈیا کے مطابق اب تک بارشوں سے چالیس لاکھ سے زیادہ افراد متاثر ہوئے ہیں۔سلہٹ ریجن کے تمام علاقے بجلی اور انٹرنیٹ تک رسائی سے محروم ہو چکے ہیں، سیلاب والے علاقوں میں مکانات ڈوب گئے ہیں، سڑکیں تالاب بن گئی ہیں، اور بیش تر علاقے زیر آب آ چکے ہیں، حکام کا کہنا ہے کہ شمال مشرق کا زیادہ تر حصہ زیر آب ہے، ہفتے کے آخر میں مزید بارشوں کی پیش گوئی کے ساتھ صورت حال مزید خراب ہو سکتی ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ بنگلا دیش کے نشیبی علاقوں میں لاکھوں لوگوں کے لیے سیلاب ایک باقاعدہ خطرہ ہے، جب کہ موسمیاتی تبدیلی نے ان خطرات میں غیر متوقع طور پر بہت زیادہ اضافہ کر دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں