20

ضمنی الیکشن، ن لیگ 10 ہزار روپے میں ووٹ خرید رہی ہے؛ عمران خان

پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی) کے چیئر مین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ضمنی الیکشن سے قبل ووٹ خریدنے کے لیے ن لیگ حلقوں میں دس دس ہزار روپے تقسیم کر رہی ہے۔ 17 جولائی کو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔‌ضمنی انتخاب کے حوالے سے شیخوپورہ کے حلقہ پی پی 140 میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ میرا خاندان سیاست میں نہیں تھا، میں گھر سے اکیلا نکلا تھا آہستہ آہستہ قافلہ بڑھتا گیا، تحریک انصاف واحد جماعت ہے جو سارے پاکستان میں ہے، مجمع دیکھ کر اپنے امیدوار کو مبارک دیتا ہوں وہ الیکشن جیت گئے ہیں، کوئی لوٹا آپ کا مقابلہ نہیں کر سکتا، کسی رنگ کا لوٹا اس جنون کا مقابلہ نہیں کر سکتا، لوٹوں پر بڑے نوٹ خرچ کیے جا رہے ہیں۔ اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن حمزہ شہباز کے ساتھ مل کر لوٹوں کو ضمنی الیکشن جتوانے کی کوشش کر رہا ہے۔ حمزہ شہباز جو مرضی کر لو یہ الیکشن نہیں جیت سکتے۔ اپنے کارکنوں کو ہدایت دیتا ہوں ٹیم بنا کر میدان میں نکلیں تو کوئی شکست نہیں دے سکتا۔کسی بھی رنگ کا لوٹا جنون کا مقابلہ نہیں کر سکتا۔
ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن پوری طرح جانبدار ہے، شیخوپورہ میں اپنے امیدوار خرم کو کہتا ہوں ووٹ لینے کے لیے آپ نے گھر گھر جانا ہے۔ مجھ پر 15 کے بجائے 15 ہزار ایف آئی آرز بھی درج کروا دیں میں پیچھے نہیں ہٹوںگا، کسی رنگ کسی سائز کا لوٹا آپ کا مقابلہ نہیں کر سکتا، سوشل میڈیا وکرز کو ڈرا رہے ہیں گھروں سے پکڑ رہے ہیں، عمران ریاض، ایاز امیر جیسے باضمیر صحافیوں پر ظلم کیا جا رہا ہے۔ پی ٹی آئی چیئر مین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ن لیگ حلقوں میں دس دس ہزار روپے تقسیم کر رہی ہے، لوگوں کو کہتا ہوں پیسے ان سے بے شک لینا اور بلے پر ٹھپہ لگا دینا، 25 مئی کو جو بھی واقعات میں افسران و اہلکار ملوث ہیں ایک ایک کا نام نوٹ کیا ہے، جب ہماری حکومت آئے گی ایک ایک کا احتساب کریں گے، آئی جی اور چیف سیکرٹری آپ ایماندار تھے اس لیے آپ کی تعیناتی کی، آپ لوگ جو حمزہ ککڑی کے ساتھ مل کر کر رہے ہیں اس کا حساب ہو گا، الیکشن میں آپ جتنی بھی غیر قانیونی چیز کر رہے ہیں اتنا ہی قانون کا سامنا کرنا پڑے گا، قوم آپ کو اب بخشے گی نہیں کیونکہ اب پاکستان بدل گیا ہے۔ پی ٹی آئی چیئر مین نے کہا کہ چین نے 35 سال میں 70 کروڑ افراد کو غربت کی لکیر سے نکال دیا۔ یہ کشمیریوں کی قربانیوں کو نظر انداز کررہے ہیں، انہیں کسی بھی طرح چوری کا پیسہ چاہیے، ان کے پیسے مغربی بینکوں میں پڑے ہوئے ہیں، لندن میں بڑے محلات ہیں، پیسے کی خاطر یہ اسرائیل کو بھی تسلیم کرنے کیلئے تیار ہیں، مغربی بینکوں اور آف شور کمپنیوں میں ان کے پیسے پڑے ہیں، سابق صدر آصف علی زرداری اور مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے ہوتے ہوئے ہمارے ملک میں ڈرون حملے ہوئے، ان کی ایک بار بھی جرات نہیں ہوئی کہ امریکا کو ڈرون حملوں سے منع کریں، یہ کبھی اپنے مفادات کیلئے ملک کی خاطر کھڑے نہیں ہوں گے، ان چوروں کی وجہ سے پاکستان ایک عظیم اور خوددار ملک نہیں بن سکا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں