شہباز، آصف زرداری اور عمران خان کروڑوں جب کہ بلاول اور عمرایوب اربوں کے مالک 41

شہباز، آصف زرداری اور عمران خان کروڑوں جب کہ بلاول اور عمرایوب اربوں کے مالک

الیکشن کمیشن نے ارکان قومی اسمبلی کے اثاثوں کی سالانہ تفصیلات جاری کردی ہے، جس کے تحت شہبازشریف، آصف زرداری اورعمران خان کروڑ پتی جب کہ بلاول بھٹو زرداری اور عمر ایوب ارب پتی نکلے۔

عمران خان

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری تفصیلات کے مطابق چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے اثاثوں میں 2020 کی نسبت 2021 میں 6 کروڑ سے زائد کا اضافہ ہوا ہے، جب کہ ان کا اندرون اور بیرون ملک کوئی کاروبار بھی نہیں۔

دستاویز کے مطابق عمران خان کے 2020 میں اثاثوں کی مالیت 8 کروڑ سے زائد تھی، اور انہوں نے 2020 میں 7 کروڑ سے زائد کا قرض بھی لیا تھا، لیکن 2021 کے اثاثوں کے مطابق عمران خان کے ذمہ کچھ واجب الادا نہیں، اور 2021 کی تفصیلات کے مطابق عمران خان 14 کروڑ 21 لاکھ روپے سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں۔

الیکشن کمیشن کی دستاویز کے مطابق عمران خان گرینڈ حیات اسلام آباد ٹاور میں ایک کروڑ 19 لاکھ مالیتی فلیٹ کےمالک ہیں، انہوں نے بنی گالا گھر کو تحفہ ظاہر کیا ہے، ان کے گوشواروں میں زمان پارک، میانوالی اور بھکر میں وراثتی زمین شامل ہے۔

دستاویز کے مطابق عمران خان کا اندرون یا بیرون ملک کوئی کاروبار نہیں، ان کے پاس اپنی کوئی ذاتی گاڑی نہیں، ان کا بینک بیلنس 6 کروڑ 3 لاکھ روپے سے زائد ہے، اور ان کے 2 اکاؤنٹس میں 3 لاکھ 29 ہزار ڈالرز ہیں۔

چیئرمین تحریک انصاف کے اثاثوں میں 2 لاکھ روپے مالیت کی 4 بکریاں بھی شامل ہیں، جب کہ عمران خان کے پاس 5 لاکھ روپے مالیت کا فرنیچر بھی ہے۔

شہبازشریف

الیکشن کمیشن کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق وزیراعظم شہبازشریف 24 کروڑ 50 لاکھ سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں، اور 14 کروڑ روپے سے زائد کے مقروض بھی ہیں، انہوں نے اپنے صاحبزادے سلمان شہباز سے 6 کروڑ سے زائد کا قرض لے رکھا ہے۔

دستاویز کے مطابق شہبازشریف کے پاس 2 گاڑیاں، بینک بیلنس 2 کروڑسے زائد کا ہے، انہوں نے اپنے بیرون ملک اثاثوں کو بھی ظاہر کیا ہے جس کے مطابق شہبازشریف بیرون ملک 13 کروڑ 74 لاکھ روپے کے اثاثوں کے بھی مالک ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری

پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو ایک ارب 60 کروڑ روپے کے اثاثوں کے مالک ہیں، اور 3 لاکھ 34 ہزار روپے ان پر واجب الادا بھی ہیں، انہوں ںے اپنا بیرون ملک کا بینک بیلنس بھی ظاہر کیا ہے جس کے مطابق بلاول بھٹو کا بیرون ملک کاروبار، اور بینک بیلنس 12 کروڑ سے زائد ہے۔

آصف زرداری

دستاویز کے مطابق سابق صدر آصف زرداری 71 کروڑ 42 لاکھ سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں، اور ان کا بیرون ملک کوئی کاروبارنہیں۔

عمر ایوب

دستاویز کے مطابق تحریک انصاف کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر عمر ایوب ایک ارب 19 کروڑ سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں، اور ان کے ذمے 11 لاکھ 55 ہزار روپے واجب الادا ہیں، انہوں نے بیرون ملک بزنس کی تفصیلات بھی جمع کرائی ہیں۔

دستاویز کے مطابق سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر بھی 8 کروڑ سے زائد کے اثاثوں کے مالک ہیں، تاہم وہ ایک کروڑ 17 لاکھ سے زائد کے مقروض بھی ہیں۔

دستاویز کے مطابق سابق وزیر مواصلات اور تحریک انصاف کے رہنما مراد سعید کا ذاتی گھر نہیں، ان کے پاس ایک گاڑی اور 15 تولہ سونا ہے، ان کے اکاؤنٹس میں 29 لاکھ 63 ہزار سے زائد رقم ہے۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق سابق وزیرخارجہ اور تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی کے اثاثے عمران خان سے زیادہ ہیں، اور وہ 21 کروڑ 96 لاکھ کے اثاثوں کے مالک ہیں۔

دستاویز کے مطابق سابق وفاقی وزیر اسد عمر 67 کروڑ 71 لاکھ کی جائیداد کے مالک ہیں۔ شیخ رشید کے پاس 72 لاکھ کی 2 گاڑیاں ہیں، پونے11کروڑکا بینک بیلنس ہے۔

وفاقی وزیرمولانا اسعد الرحمان 50 لاکھ کی جائیداد کے مالک ہیں، ان کا بینک بیلنس 10 لاکھ، کوئی گاڑی یا بزنس نہیں۔

علی امین گنڈا پور6 کروڑ 63 لاکھ کی جائیداد کے مالک ہیں، اور کے پاس ایک کروڑ 34 لاکھ کی 2 گاڑیاں ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں