35

شدید گرمی اور لوڈشیڈنگ کے بعد کراچی والوں کے لئے ایک اور بری خبر

شدید گرمی اور لوڈشیڈنگ کے بعد کراچی والوں کے لئے ایک اور بری خبر یہ ہے کہ اربوں روپے کے واجبات کی عدم ادائیگی پر سوئی سدرن گیس نے کے الیکٹرک کو گیس کہ فراہمی کم کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔ جس کے بعد شہر میں لوڈشیڈنگ میں مزید اضافے کا خدشہ ہے، کیوں کہ کے الیکٹرک کی جانب سے لوڈشیڈنگ کی وجہ گیس کی کمی ہی بتائی جاتی ہے
سوئی سدرن گیس کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ ایس ایس جی سی سندھ ہائی کورٹ کے حکم پر کے الیکٹرک کو حتیٰ الوسع مقامی گیس فراہم کر رہا ہے، اور اس حکم کے مطابق کے الیکٹرک کو ایس ایس جی سی کو باقاعدگی سے ادائیگیاں کرنے کی بھی ہدایت کی گئیں۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ اپریل 2018 سے موثر ایس ایس جی سی نے کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے فیصلے کے مطابق ان کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے مقامی گیس کے علاوہ کے الیکڑک کو آر ایل این جی کی فراہمی شروع کر دی تھی، اس فیصلے میں مقدار کی کوئی حد متعین نہیں کی گئی تھی، اور اس وقت ایس ایس جی سی نے زبانی طور پر مقامی گیس کے کچھ حجم سے اتفاق کیا تھا، جو اس وقت کی ڈیمانڈ اور سپلائی نمبرز پر مبنی تھی، جس کا فی الحال اطلاق نہیں کیا جا سکتا۔
ایس ایس جی سی کا کہنا ہے کہ گزشتہ تین سالوں میں ایس ایس جی سی کو فراہم کی جانے والی مقامی گیس کی سپلائی میں تیزی سے کمی آئی ہے، اور تقریباً 278 ایم ایم سی ایف ڈی گیس کی کمی واقع ہوئی ہے، اپریل 2018 میں دی جانے والی 1,159 ایم ایم سی ایف ڈی سپلائی کم ہوکر مئی 2022 میں 881 ایم ایم سی ایف ڈی رہ گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں