سپریم کورٹ نے وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق تحریری حکم نامہ جاری کردیا 35

سپریم کورٹ نے وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق تحریری حکم نامہ جاری کردیا

سپریم کورٹ نے وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق تحریری حکم نامہ جاری کردیا ہے۔

سپریم کورٹ کا 10 صفحات پر مشتمل وزیراعلیٰ پنجاب کے رن آف الیکشن سے متعلق فیصلہ جسٹس اعجاز الاحسن نے تحریرکیا ہے ۔

حکم نامے میں کہا گیا ہےکہ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کا سیکنڈ پول 22 جولائی کو پنجاب اسمبلی میں ہوگا، وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے سیکنڈ پول کو ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی چیئرکریں گے، اسپیکر یا ڈپٹی اسپیکر پول کے بعد باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کریں گے، فریقین کی یقین دہانی پر لاہور ہائی کورٹ کے حکم میں ترمیم کر رہے ہیں۔

سپریم کورٹ کا حکم نامے میں کہنا ہےکہ وزیراعلیٰ حمزہ شہباز اور ان کی کابینہ عدالت کو کرائی گئی یقین دہانی کے مطابق صاف شفاف انتخاب کرائیں، پنجاب کے عوام کو نمائندگی اورگورننس کے حقوق کے لیے وزیراعلیٰ اپنی ذمہ داری 22 جولائی تک پوری کریں گے،لاہور ہائی کورٹ 27 مئی کے مختصر فیصلےکی تفصیل ایک ہفتےکے بعد جاری کرے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں