سندھ ہائی کورٹ کا نمرہ کاظمی کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم 29

سندھ ہائی کورٹ کا نمرہ کاظمی کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم

سندھ ہائی کورٹ نے مبینہ طور پر پسند کی شادی کرنے والی نمرہ کاظمی کوعدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں مبینہ طور پر پسند کی شادی کرنے والی نمرہ کاظمی کی بازیابی سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔سندھ ہائی کورٹ نے ایس ایس پی ایسٹ اور ایس ایچ او سعود کو نمرہ کاظمی کی بازیابی کی ہدایت کردی۔عدالت نے حکم دیا کہ نمرہ کاظمی کو بازیاب کرا کر 25 مئی تک عدالت میں پیش کریں۔درخواست نمرہ کاظمی کے اہلخانہ کی جانب سے دائرکی گئی ہے۔

نمرہ کاظمی کے والدین نے عدالت کے سامنے درخواست میں مؤقف پیش کیا کہ نہ بیٹی سے ملنے دیا جا رہا ہے نہ ہی کوئی خبر دی جا رہی ہے۔ نمرہ کی عمر ابھی 18 سال سے کم ہے۔نمرہ کی والدہ نےعدالت سے استدعا کی کہ نمرہ کو بازیاب کرانے کا حکم دیا جائے۔اہل خانہ کی جانب سے درخواست میں یہ بھی استدعا کی گئی کہ نمرہ کاظمی کی 18 اپریل کو ہونے والی شادی کوغیرقانونی قراردیا جائے۔نمرہ کاظمی کے اغوا کا مقدمہ سعود آباد تھانے میں درج کیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں