خوفناک زلزلےکی پیشگوئی کردی گئی

1
120

چمن : (ہاٹ لائن نیوز) سولرسسٹم جیومیٹری سروے (ایس ایس جی ایس) کی طرف سے پیشگوئی کی گئی ہے کہ 84 گھنٹوں کے دوران چمن فالٹ لائن میں زلزلہ آسکتا ہے۔

ایس ایس جی ایس نے بتایا ہے کہ پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں زیرِ زمین چمن فالٹ لائن میں بہت تیز لرزش ریکارڈ کی گئی ہے، جس کے بعد قوی امکان ہے کہ اس علاقے میں اگلے دو دنوں میں کوئی زلزلہ آسکتا ہے جس کی شدت ریکٹراسکیل پر 6 یا پھر اُس سے بھی زیادہ ریکارڈ ہوسکتی ہے۔

زلزلہ پیما ریسرچ انسٹیٹیوٹ نے اس حوالے سے مزید کہا ہے کہ سطح سمندر کے قریب فضا میں برقی چارج کا اتارچڑھاؤ ریکارڈ کئے جانے کی وجہ سے نقشے میں جامنی رنگ والے علاقوں میں آئندہ چند دنوں میں طاقتور زلزلہ آسکتا ہے۔

خیال رہے کہ نقشے میں واضح کیے گئے یہ علاقے صرف ایک اندازے کے تحت بتائے گئے ہیں کیونکہ زلزلہ آنے کے درست مقامات کے تعین کا کوئی حتمی طریقہ موجود نہیں۔

ریسرچ انسٹیٹیوٹ نے چمن فالٹ لائن کو ممکنہ زلزلے کیلئے انتہائی طاقتور علاقہ قرار دے دیا ہے۔

چمن فالٹ لائن:
چمن فالٹ لائن جنوبی ایشیاء کی سب سے بڑی فالٹ لائن ہے جو کہ صوبہ بلوچستان میں واقع ہے، اس میں پاکستان کے علاؤہ افغانستان کے کچھ علاقے بھی شامل ہیں۔

خیال رہے کہ یہ فالٹ لائن 900 کلو میٹر طویل ہے جس پر31 مئی 1935 میں کوئٹہ میں انتہائی خطرناک زلزلہ آیا تھا، جس میں ہزاروں افراد زندگی کی بازی ہار گئے تھے۔ اس فالٹ لائن میں پاکستان اور افغانستان کے علاقے شامل ہیں۔

1 comment

Leave a reply