خاتون ڈاکٹر کو ہراساں کرنے پر دو بھائیوں میں سے ایک گرفتار

0
49

ہاٹ لائن نیوز: وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) سائبر کرائم اسلام آباد نے سوشل میڈیا پر خاتون ڈاکٹر کی تصاویر اپ لوڈ کرکے بیرون ملک ملازمت کے بہانے بلیک میل کرنے، ہراساں کرنے اور رقم بٹورنے کے الزام میں 1 ملزم پر فرد جرم عائد کردی۔ گرفتار، ایف. آئی ااے کو جرم میں ملوث مرکزی ملزم کے 2 ساتھیوں کی بھی تلاش ہے جن میں ایک خاتون ڈاکٹر اسلام آباد سے ہے۔ سائبر کرائم سرکل میں مقدمہ درج کراتے ہوئے اس نے بتایا کہ بدر شہزاد اور اس کے 2 ساتھیوں نے مالدیپ کے ہسپتال میں نوکری دلانے کے بہانے اس سے 1900 ڈالر وصول کیے ہیں۔

مقدمہ درج ہونے کے بعد ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف۔ آئی اے سائبر کرائم اسلام آباد وقار الدین سید ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے۔ سائبر کرائم ونگ نے ایاز خان کو انکوائری کے احکامات جاری کیے، سب انسپکٹر حمیرا سلیم نے انکوائری کی اور الزامات ثابت ہونے کے بعد ملزمان بابر شہزاد اور بدر شہزاد پر فرد جرم عائد کردی۔ مقدمہ درج کر کے دونوں بھائیوں بدر شہزاد اور بابر شہزاد کے خلاف جرائم میں معاونت اور حوصلہ افزائی کرنے پر مقدمہ درج کر لیا گیا، ملزمان کا تعلق اٹک سے ہے، پولیس کو ملزمان عثمان راشد ملک اور بدر شہزاد کی تلاش ہے جبکہ ڈاکٹر سے رقم وصول کرنے پر 3 ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا، واٹس ایپ گروپس پر ڈاکٹر کی قابل اعتراض تصاویر اپ لوڈ کر کے اسے ہراساں کرنے پر حکام کا کہنا ہے کہ مرکزی ملزمان بدر شہزاد اور عثمان راشد کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

Leave a reply