حکومت اور آئی ایم ایف کے درمیان مزاکرات آج سے شروع ہوں گے 39

حکومت اور آئی ایم ایف کے درمیان مزاکرات آج سے شروع ہوں گے

‏پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات آج سے دوحہ میں شروع ہونے جارہے ہیں۔

وزارت خزانہ کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مزاکرات آج سے دوحہ میں ہونے جارہے ہیں جس میں سبسڈی کا خاتمہ اور ٹیکسوں میں اضافے سمیت دیگر امور زیر بحث آئیں گے۔

وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ ‏دوحہ میں ہونے والے مذاکرات 25 مئی تک جاری رہیں گے، پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان ساتویں اقتصادی جائزہ مذاکرات میں معاشی امور زیر غور آئیں گے۔

واضح رہے کہ پروگرام کی بحالی کے لیے حکومت کو پیٹرول، ڈیزل اور بجلی پر سبسڈی میں بتدریج کمی لانا ہوگی جبکہ ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کی بنیادی تشویش ٹیکس میں اضافہ ہوگا۔

ذرائع کے مطابق آ‏ئی ایم ایف کی دوسری شرط پیٹرولیم مصنوعات پر سبسڈی کا خاتمہ ہے جبکہ آئی ایم ایف سے مذاکرات کے دوران اسٹیٹ بینک مانیٹری پالیسی کا اجلاس بھی 23 مئی کو ہوگا۔

مزاکرات کے باعث نئے مالی سال 2022-23 کا بجٹ 10 جون کو پیش کیے جانے کا امکان ہے جبکہ کامیابی کی صورت میں پاکستان کو 96 کروڑ ڈالر کی اگلی قسط ملے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں