توشہ خانہ تحائف کیس عدالت کس پر برہم ؟

1
85

لاہور: (ہاٹ لائن نیوز) توشہ خانہ تحائف کو الیکشن کمیشن کے کاغذات میں ظاہر نہ کرنیوالے سیاستدانوں کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی ۔

عدالت نے الیکشن کمیشن کے وکیل کو تحریری جواب کیلئے آخری مہلت دیدی ۔

عدالت نے جواب داخل نہ کرانے پر وکیل الیکشن کمیشن کی سرزنش کردی ، عدالت نے الیکشن کمیشن کو 2 اکتوبر تک جواب کیلئے مہلت دیدی ۔

جسٹس راحیل کامران شیخ کا کہنا ہے کہ آپ نے عدالتوں کا مذاق بنایا ہوا ہے ، ایک مہینہ ہوگیا ہے اس درخواست کا جواب نہیں دیا،میں آج ہی اس درخواست پر فیصلہ کردیتا ہوں ۔

وکیل الیکشن کمیشن نے استدعا کی کہ جواب داخل کرانے کیلئے مہلت دی جائے ۔

ایڈووکیٹ ندیم سرور کی جانب سے درخواست دائر کی گئی ، جسٹس راحیل کامران شیخ نے شہری تنویر سرور کی درخواست پر سماعت کی

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن نے جانبداری کا مظاہرہ کیا،صرف ایک شخصیت کے خلاف کارروائی کی گئی،الیکشن کمیشن نے توشہ خانہ کیس میں پسند اور نا پسند کو ملحوظ خاطر رکھا،چیئرمین تحریک انصاف کے خلاف توشہ خانہ میں کاروائی کر کے نااہل قرار دیا گیا،الیکشن کمیشن نے کسی دوسرے رکن اسمبلی کے خلاف شکایت درج نہیں کی،تحائف لینے اور ظاہر نہ کرنے والے اراکین اسمبلی کے خلاف یکساں کاروائی ہونی چاہیے ۔

درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ عدالت الیکشن کمیشن کو توشہ خانہ کے تحائف ظاہر نہ کرنے والے ممبران اسمبلی کے خلاف قانونی کارروائی کا حکم دے ۔

1 comment

Leave a reply