8

اپٹما کے سالانہ الیکشن میں گوہراعجاز گروپ کی مسلسل 14ویں فتح

اسلام آباد: آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن (APTMA) کے سالانہ انتخابات 2022-23 میں ڈاکٹر گوہر اعجاز گروپ نے مسلسل 14 ویں سال کلین سویپ کرلیا۔
اپٹما کے سالانہ انتخابات میں گوہر اعجاز گروپ نے مرکز اور زونل دونوں سطحوں پر میدان مارلیا۔ یہ گوہر اعجاز گروپ کی مسلسل 14 ویں سال فتح ہے۔ اس تاریخی فتح پر ڈاکٹر گوہر اعجاز نے اپنے گروپ ممبران کو مبارک باد دی۔
چیف اپٹما، رضا باقر نے انتخابی نتائج کا اعلان کرتے ہوئے اعلان کیا کہ رحمان نسیم، زاہد رشید خواجہ، سید علی احسن، ایس ایم تنویر، حامد زمان، شائق جاوید، محمد انیس، اسد شفیع، امان اللہ قاسم، عمران مقبول، محمد جنید، نوید احمد، زاہد مظہر اور زوہیر دلاور آغا کو سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے بلامقابلہ ممبر منتخب کر لیا گیا۔
اسی طرح چیف اپٹما رضا باقر نے زونل انتخابات کے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ حامد زمان چیئرمین، کامران ارشد سینئر وائس چیئرمین منتخب ہوئے جب کہ محمد انیس، وائس چیئرمین؛ جناب اسد شفیع خزانچی اور ہارون صاحب شہزادہ الٰہی شیخ، عمر لطیف چوہدری، عمیر عابد، ایس ایم نبیل، محمد
علی چوہدری، احسن شاہد وڑائچ، شہروز احمد، ہارون شاہد اور سفیان اختر زونل منیجنگ کمیٹی کے ممبران کے طور پر منتخب ہوئے۔
گوہر اعجاز صاحب نے تاریخی فتح کے بعد اپنے خطاب میں اس عزم کا بھی اظہار کیا کہ 2018-19 تک ملک کی ٹیکسٹائل برآمدات 12-13 بلین ڈالر پر جمود کا شکار تھیں تاہم نو منتخب قیادت برآمدی صلاحیت کو مضبوط بنانے کے لیے سخت محنت کرے گی۔
ٹیکسٹائل صنعت کو درپیش مسائل کا تذکرہ کرتے ہوئے گوہر اعجاز کا کہنا تھا کہ متعدد مسائل خاص طور پر بجلی کے ٹیرف اور توانائی کی عدم دستیابی کی وجہ سے ٹیکسٹائل صنعت کو مشکلات کا سامنا ہے۔
اس موقع پر گوہر اعجاز کا کہنا تھا کہ ان کے گروپ کی جانب سے کی جانے والی بھرپور کوششوں کے نتیجے میں حکومت نے برآمدات کے لیے اورینٹڈ سیکٹرز کو علاقائی طور پر بجلی اور گیس کے مسابقتی ٹیرف کی منظوری دی تھی۔
انہوں نے کہا کہ بجلی گیس کے ٹیرف میں دی گئی رعایت کی لاگت 2.64 فیصد سے زیادہ نہیں جب کہ اس کے بدلے میں ٹیکسٹائل سیکٹر نے ملک کو ایک سال میں 26 فیصد اضافے کے ساتھ 19.33 ارب ڈالر کی برآمدات دیں جب کہ برآمدات میں یہ تین سال میں 54 فیصد اضافہ ہے۔
گوہراعجاز نے مزید کہا کہ ٹیکسٹائل سیکٹر میں 5 ارب ڈالرز کی نئی سرمایہ کاری سے برآمدات کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوگا جو برآمدات کنندگان اور دیگر ایکسپورٹ انڈسٹریز کو دوستانہ ماحول اور اعتماد فراہم کرے گا۔
پاکستان سے برآمدات اور ملکی معیشت کو فروغ دینے کے لیے گوہر اعجاز نے اپنے مستقبل کے وژن سے آگاہ کرتے ہوئے ’’ روڈ ٹو 50 ارب ڈالر منصوبے‘‘ کی لانچنگ کا اعلان کیا جس کے تحت اسٹیچنگ کے شعبے کے فروغ اور 3 ارب ڈالر یارن کی تبدیلی اور ملکی ملبوسات کو ویلیو ایڈڈ مصنوعات میں شامل کرکے 10 بلین ڈالر تک کی اضافی برآمدات کی جائیں گی۔
اس موقع پر گوہر اعجاز نے اپنے گروپ کی جانب سے گارمنٹس ٹریننگ سینٹر کے قیام کا بھی اعلان کیا۔ جو APTMA کی سرپرستی میں وسیع پیمانے پر گارمنٹ سیکٹر میں افرادی قوت کو تربیت دے گا۔
گوہر اعجاز نے کہا کہ 25 سے 30 کروڑ کے نرم مدتی قرضوں کی توسیع سے تربیت یافتہ مرد اور خواتین 5 سال سے بھی کم مدت میں برآمدات کو 50 ارب ڈالر سے زیادہ کر دیں گے جس کے بعد غیر ملکی ڈونرز سے قرض لینے کی کوئی ضرورت نہیں پڑے گی۔
گوہر اعجاز نے پاکستان اکنامک فورم کے قیام کا بھی اعلان کیا جو معیشت کے تمام شعبوں کے ماہرین پر مشتمل ہوگی اور جس کا مقصد ملکی معیشت کا تجربہ کرکے آئندہ دس سال کے لیے معیشت کی بحالی اور اقتصادی ترقی کے لیے بنیادی خاکہ تیار کرنا ہے۔
گوہر اعجاز نے نے اس بات کا بھی اعادہ کیا کہ پائیدار برآمدات کی قیادت میں معاشی نمو ناگزیر ہے۔ ملک میں اضافی ملازمتیں پیدا کرنے کے لیے ملک کی ترقی اور ملک کے معاشی استحکام کے لیے زیادہ سے زیادہ زرمبادلہ کمائیں۔

انھوں نے امید ظاہر کی کہ ملک میں حالیہ بارشوں اور سیلاب سے پیدا ہونے والی صورت حال کے باوجود اس سال کپاس کی بہتر فصل ہو گی۔ مقامی کسانوں کو کپاس کی عالمی قیمتوں کی پیشکش سے کپاس کی پیداوار بڑھانے میں کافی مدد ملے گی۔

اس موقع پر گوہر اعجاز نے سیلاب کے متاثرین سے ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے اپٹما کی جانب سے فلڈ ریلیف فنڈ میں 25 کروڑ روپے دینے کا اعلان کرتے ہوئے مشکل کی اس گھڑی میں عوام اور حکومت کا ساتھ دینے کے عزم کا اظہار کیا۔

گوہر اعجاز صاحب نے سبکدوش ہونے والی اپٹما کی قیادت کو انڈسٹری کی بہترین قیادت کرنے پر سراہتے ہوئے کہا کہ کورونا وبا، توانائی اور مالی مشکلات کے باوجود اس قیادت نے انڈسٹری کی ترقی کے لیے اپنی تمام تر توانائیاں صرف کیں۔

اعجاز گوہر نے امید ظاہر کی کہ نو منتخب عہدیداران اور مینیجنگ ممبران ٹیکسٹائل کی برآمدات کو فروغ دینے اور ملکی معاشی ترقی کے لیے اپنی کوششیں تیز تر کریں گے۔

اس موقع پر سبکدوش ہونے والے چیئرمین عبدالرحیم ناصر نے ٹیکسٹائل کے شعبے کو صحیح سمت پر ڈالنے کے لیے ڈاکٹر اعجاز گوہر کے وژن، رہنمائی اور تمام تر تعاون پر شکریہ ادا کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں