اٹھارہ قیراط سونے سے بنا ٹوائلٹ چوری

0
180

 

ہاٹ لائن نیوز : چار افراد پر انگلینڈ کے شہر ووڈسٹاک میں بلین ہائیم پیلس سے 18 قیراط سونے کا ٹوائلٹ چوری کرنے کا الزام ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق پبلک پراسیکیوشن نے 35 سے 39 سال کی عمر کے 4 افراد پر ٹوائلٹ چوری کا الزام لگایا۔ پبلک پراسیکیوٹر کے مطابق چاروں ملزمان 28 نومبر کو آکسفورڈ ڈسٹرکٹ کورٹ میں پیش ہوں گے۔

ٹوائلٹ 18 کیرٹ سونے سے بنا ہے، اور اسکی قیمت 4.8 ملین پاؤنڈ سٹرلنگ اور 5.95 ملین ڈالر (پاکستانی روپے میں 1.7 بلین روپے سے زیادہ) ہے۔ یہ بیت الخلا چار سال قبل ستمبر 2019 میں بلین ہائیم پیلس سے چوری ہوا تھا۔

یہ بیت الخلا (ٹائلٹ) اٹلی سے تعلق رکھنے والے تصوراتی فنکار موریزیو کاتالانو کے ایک فن پارے کا حصہ تھا اور اس بیت الخلا کو بلین ہائیم پیلس میں دکھایا گیا تھا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ ‘گولڈن ٹوائلٹ’ چوری ہونے سے پہلے مکمل طور پر کام کرتا تھا اور نمائش میں آنے والے افراد منفرد ٹوائلٹ استعمال کرنے کے لیے تین منٹ کا ٹائم سلاٹ محفوظ کر سکتے ہیں۔

 

یہ 18 قیراط سونے کا کموڈ عالمی ثقافتی ورثہ ہے اور یہ ونسٹن چرچل کی جائے پیدائش بھی ہے۔ 18ویں صدی میں بنایا گیا یہ وسیع و عریض محل یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے میں شامل ہے۔

Leave a reply