آئی ایم ایف پروگرام بحالی کیلئےپیٹرول کی قیمتوں میں مزیدکتنا اضافہ کرنا پڑےگا؟ 55

آئی ایم ایف پروگرام بحالی کیلئےپیٹرول کی قیمتوں میں مزیدکتنا اضافہ کرنا پڑےگا؟

ہاٹ لائن :آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کیلئے حکومت کو پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں بالترتیب 23؍ اور 55؍ روپے کا مزید اضافہ کرنا ہوگا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں دو مرتبہ 30؍ روپے کا اضافہ کرنے کے بعد، توقع ہے کہ حکومت نئے مالی کے آغاز سے قبل تیل پر سبسڈی مکمل طور پر ختم کر دے گی۔ بین الاقوامی مارکیٹ میں تیل کی موجودہ قیمتوں کے تناظر میں پٹرول پر سبسڈی 23؍ روپے جبکہ ڈیزل پر 55؍ روپے ہے۔ قیمتوں کا حتمی تعین آئندہ ہفتے اوگرا کرے گا اور اپنی سفارشات سے وزیراعظم کو آگاہ کرے گا۔
پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں 60؍ روپے تک کے بھاری اضافے اور آئی ایم ایف کا منظور کردہ بجٹ پیش کیے جانے کے بعد عموماً خیال کیا جاتا ہے کہ آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کیلئے تمام پیشگی شرائط پوری کی جا چکی ہیں اور اب عالمی ادارہ کسی بھی وقت ہری جھنڈی دکھا سکتا ہے۔ تاہم، معاملہ ایسا نہیں ہے۔ کہا جاتا ہے کہ پہلی بڑی رکاوٹ نئے مالی سال کے آغاز سے تیل پر تمام سبسڈیوں کا خاتمہ ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ قیمتوں میں گزشتہ اضافے کے وقت پٹرول اور ڈیزل پر باقی رہ جانے والی سبسڈی بالترتیب 9؍ اور 23؍ روپے تھی اور اب عالمی سطح پر قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے سبسڈی میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں