افغان مہاجرین کے حوالے سے سراج الحق کا بڑا بیان آ گیا

0
57

پشاور: (ہاٹ لائن نیوز) امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ افغانستان اور پاکستان جڑواں بھائی ہیں، انہیں الگ نہیں کیا جاسکتا، ہماری تہذیب، ثقافت اور مذہب مشترک ہیں۔ افغان مہاجرین کو نکالنے کے جلد بازی کے فیصلے سے گریز کیا جائے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے المکروز اسلامی پشاور میں جماعت اسلامی کی کمیٹی برائے افغان امور کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

اجلاس میں پاک افغان حکومتوں کے درمیان کشیدگی اور افغان باشندوں کو پاکستان سے نکالے جانے کے اعلان کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

سراج الحق نے کہا کہ دونوں ممالک کو انخلاء کے حوالے سے مشترکہ جامع منصوبہ بندی کرنی چاہیے۔ جلد بازی کے فیصلے اور اقدامات فریقین کے درمیان اختلافات اور مسائل کا باعث بنیں گے۔ دونوں ممالک نے مل کر استعماری قوتوں کا مقابلہ کیا ہے اس لیے خوشحال مستقبل کے لیے مل کر منصوبہ بندی کرنا ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایسے وقت میں جب افغانستان میں مستحکم حکومت قائم ہے، دوسرے ممالک اپنے سفارت خانے کھول رہے ہیں، پاکستان نفرت کو ہوا نہ دے۔ جماعت اسلامی افغانوں کا مقدمہ لڑے گی۔

جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے کہا کہ پاکستانی عوام نے نصف صدی سے افغانوں کا ساتھ دیا ہے اور اس کی بھاری قیمت ادا کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں یہ بھی امید ہے کہ افغان حکومت پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف پاکستان کے ساتھ تعاون کرے گی۔ دونوں ملکوں میں فرق ہمارے خلاف سیکولر قوتوں کا منصوبہ ہے۔ اس منصوبے کو ناکام بنانے کے لیے دونوں ممالک کے عوام کو صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ دونوں ممالک 31 اکتوبر تک پاکستان میں موجود غیر رجسٹرڈ افغانوں کے انخلاء کے لیے باوقار راستہ تلاش کرنے کی کوشش کریں۔

Leave a reply